نوجوانی میں 4 کام کریں؛ خوشحال زندگی پائیں

انتظار فرمائیں۔۔۔

اعلی تعلیم مکمل کرنے کے بعد ہر نوجوان عملی میدان میں اترنے کے لیے تیار ہوجاتا ہے۔ جوش اور جزبے سے سرچار نوجوان ہر چوٹی سر کرنے کا عزم لیے آگے بڑھتے ہیں تو پھر انہیں اندازہ ہوتا ہے کہ تعلیم سے کاروباری پیشے کی طرف منتقلی اتنی آسان نہیں کہ جتنی سمجھی جاتی ہے۔ درسگاہ میں آپ کی مدد کے لیے کئی ہاتھ آگے بڑھتے ہیں لیکن عملی زندگی میں قدم رکھتے ہی آپ کو تن تنہا کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ایسی صورتحال میں اگر نوجوان تعلیم سے فراغت کے بعد آنے والے چند سالوں مین یہ کام کر گزریں تو انہیں مستقبل میں خاصی سہولت میسر آسکتی ہے اور وہ خوشحال زندگی گزار سکتے ہیں۔

سہل پسندی سے چھٹکارا پائیں
دوران طالب علمی اکثر خوش نصیبوں کو والدین اور سرپرستوں کی جانب سے ہر ممکن سہولت فراہم کی جاتی ہے۔ لیکن نوجوانی میں کسی اور پر انحصار کرنے کے بجائے آپ کو اپنی مدد آپ کرنا ہوگی تبھی آپ حقیقی زندگی میں آگے بڑھ پائیں گے۔ اس لیے آگے بڑھیں اور اپنا کاروبار، ملازمت کا آغاز کریں۔ لوگوں سے ملیں جلیں، دوستوں میں اضافہ کریں اور اپنی صلاحتیوں کو بروئے کار لے کر آئیں۔

ہنر میں مہارت حاصل کریں
اپنی تعلیم، دلچسپی اور مشغلے کو مدنظر رکھتے ہوئے کسی بھی ایک شعبے کا انتخاب کریں اور پھر اس میں زیادہ سے زیادہ مہارت حاصل کرنے کی کوشش کریں۔ ضروری نہیں کہ یہ شعبہ ڈاکٹر یا انجینئر ہی کا ہو بلکہ آپ کسی مخصوص زبان یا کمپیوٹر سے متعلق کسی شعبے میں بھی مہارت حاصل کرسکتے ہیں۔ نوجوانی میں حاصل کردہ مہارت آپ کو برے سے برے وقت میں بھی مدد کرے گی اور آپ مشکل وقت سے نکلنے میں کامیاب ہوپائیں گے۔

خود پر سرمایہ کاری کریں
سارا وقت ٹیلی ویژن کے سامنے بیٹھ کر یا دوستوں سے گپ شپ کرتے گزارنا مشکل نہیں لیکن اس سے کہیں زیادہ بہتر ہے کہ آپ اپنا وقت اور پیسہ خود اپنی ذات پر لگائیں۔ اس کے لیے آپ کتابیں پڑھنے، نئی زبان سیکھنے یا پھر کوئی بھی ایسا کام کرسکتے ہیں کہ جو آپ کو دوسروں سے منفرد بنائے اور آپ کی قدر میں اضافہ کرے۔ مثال کے طور پر اگر کئی مقامی زبانوں پر عبور حاصل کرتے ہیں تو ہر جگہ ان تمام لوگوں سے زیادہ اہمیت اور حیثیت حاصل ہوگی جو صرف ایک یا دو زبانیں ہی جانتے ہیں۔

زیادہ سے زیادہ سفر کریں
کہتے ہیں سفر وسیلہ ظفر ہوتا ہے۔ بالکل درست کہتے ہیں کیوں کہ اپنے آبائی علاقے سے باہر نکل کر آپ کے ذہن کو وسعت اور نت نئے تجربات حاصل ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ سفر آپ کو کئی سبق بھی دیتا ہے۔ اگر آپ ملک کے شمالی علاقوں میں جائین تو آپ کو ایک بالکل مختلف موسم، مقامات اور لوگوں سے ملنے کا موقع ملے گا۔ اکثر لوگ سوچتے ہیں کہ سیر و سیاحت کا شوق بعد میں پورا کریں گے لیکن ایک مرتبہ مصروف ہوجانے کے بعد پھر انہیں موقع ہی نہیں مل پاتا اور یوں وہ دنیا کو محدود نظریے سے ہی دیکھتے رہتے ہیں۔

loading ads...

Facebook Comments



POST A COMMENT.