دریائے شکاگو سبز ہوگیا، ایک مرتبہ پھر!

انتظار فرمائیں۔۔۔

اگر آپ سبز پانی والے دریا کی تصاویر کو فوٹو شاپ سمجھ رہے ہیں تو فوراً اس خیال کو ترک کر دیجیے کیوں کہ یہ دریائے شکاگو کی حقیقی تصاویر ہیں۔ ارے ڈرئیے نیں، یہ کسی قدرتی آفت کا پیش خیمہ بھی نہیں ہے بلکہ یہ ایک قدیم روایتی تہوار کا حصہ ہے جس میں انسان خود دریا کے پانی کو سبز بناتے ہیں۔

مغربی ممالک میں ہر سال 17 مارچ کو سینٹ پیٹرک ڈے منایا جاتا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ اس دن آئرلینڈ کے اولین سرپرست بزرگ سینٹ پیٹرک کی شہادت ہوئی تھی اور انہی کی مناسبت سے ہر چیز کو سبز رنگ سے مزین کیا جاتا ہے۔

سینٹ پیٹرک ڈے کی روایت رہی ہے کہ اسے صرف ہفتے کے روز ہی منایا جاتا ہے۔ لیکن اگر کسی سال 17 مارچ کی تاریخ ہفتے کے روز نہ آئے تو اس دن کی تقریبات ایک ہفتے پہلے ہی منعقد کی جاتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اس مرتبہ سینٹ پیٹرک ڈے کے حوالے سے تقریبات ایک ہفتے قبل ہی شروع کی جاچکی ہیں اور اسی ضمن میں دیرائے شکاگو کے پانی کا رنگ سبز کیا گیا ہے۔

chicagostpatricksday2015

اس روز کی مناسبت سے سالانہ پریڈ امریکا کے کئی بڑے شہروں بشمول واشنگٹن، شمالی کیرولینا، ٹیکساس اور ڈیلاس میں منعقد کی جاتی ہے۔ لیکن شکاگو کی سالانہ تقریبات کو دنیا بھر میں میں سب سے زیادہ شہرت حاصل ہے اور اس کی بنیادی وجہ دریائے شکاگو کو سبز رنگ سے مزین کر کے منفرد شکل دینا ہے۔ دریا کو سبز کرنے کی روایت 50 سال سے بھی زائد عرصہ پرانی ہے۔

دریائے شکاگو کو رنگنے کا کام ہر سال مقامی مزدوروں کی انجمن خود کرتی ہے۔ اس کے لیے سبزیوں سے بنایا گیا رنگ استعمال کیا جاتا ہے۔ گو کہ اس رنگ کو تیار کرنے کا طریقہ اب تک خفیہ رکھا گیا ہے تاہم اسے ماحول دوست اور مضر اثرات سے پاک قرار دیا جاتا ہے۔

green-river

ہر سال کی طرح اس مرتبہ بھی دریا کو رنگنے کا آغاز صبح 9 بجے شروع ہوا جس کے فوری بعد قریباً 12 بجے پریڈ کا آغاز ہوا۔ دریا میں پھینکا گیا سبز رنگ 6 سے 12 گھنٹے تک دیکھا جاسکتا ہے۔

loading ads...

Facebook Comments



POST A COMMENT.