سبزیاں چھلکے سمیت پکائیں، یہ صحت بخش ہے

انتظار فرمائیں۔۔۔

ہم جب بھی سبزیاں پکانے کا ارادہ کرتے ہيں تو سب سے ناگوار مرحلہ وہ ہوتا ہے جب انہیں کاٹنا پڑتا ہے۔ ایک تو اضافی وقت بھی اس پر لگتا ہے اور پھر جو چھلکا اترتا ہے اس کے نتیجے میں کوڑے میں بھی اضافہ ہوتا ہے لیکن صحت کے ماہرین کہتے ہیں کہ جسے ردی کی ٹوکری میں پھینکا جاتا ہے وہی سبزیوں کا سب سے صحت بخش حصہ ہوتا ہے،یعنی چھلکے۔

نیو یارک کی معروف ماہر غذائیات میری جین ڈیٹرائیر کا کہنا ہے کہ سبزیوں کو چھلکوں سمیت پکانے کی کئی وجوہات ہیں اور سب سے بڑی وجہ ہے کہ آخر چھلکے اتار کر ہم کس قسم کی غذائیت سے محروم ہو جاتے ہیں۔ آلوؤں، گاجروں اور کھیرے کے چھلکوں میں کئی فوائد ہیں۔ ان میں فائبر ہوتا ہے اور زیادہ تر سبزیاں ایسی ہی ہیں جن کی اصل غذائیت چھلکے میں ہے۔ مثال کے طور پر کھیرے کو لے لیں۔ گہرا سبز رنگ اینٹی آکسیڈنٹس کی وجہ سے ہے جس میں وٹامن 'کے' بھی بھرپور ہوتا ہے۔ آلوؤں کے چھلکے میں فولاد، کیلشیم، پوٹاشیم، میگنیشیم، وٹامن بی6 اور وٹامن سی ہوتا ہے۔

سبزیوں میں پائے جانے والے وٹامن سی اور ای جسم کو نقصان پہنچانے والے فری ریڈیکلز سے بچاتے ہیں۔ پھر زیادہ رنگ دار سبزیاں جیسا کہ گاجریں اور شملہ مرچیں فائٹونیوٹرنٹس کی حامل ہوتی ہیں جو جگر کو صحت دینے والی خصوصیات رکھتی ہیں۔

چھلکا اتارنے کی کئی وجوہات میں سے ایک یہ بیان کی جاتی ہیں کہ سبزیوں کی کاشت کے دوران فصلوں پر کیڑے مار ادویات کا اسپرے کیا جاتا ہے لیکن ڈیٹرائر کہتی ہیں کہ اس کا علاج اچھی طرح دھونا ہے، چھلکا ہی اتار دینا نہیں۔

loading ads...

Facebook Comments



POST A COMMENT.