گھریلو ٹوٹکوں سے بیماریوں کا علاج

انتظار فرمائیں۔۔۔

نزلہ، زکام، بخار اور سردرد جیسی چھوٹی موٹی بیماریوں سے چھٹکارا پانے کے لیے دادیاں اور نانیاں جو ٹوٹکے بتاتی ہیں، انہیں آج اب کم ہی لوگ قابل استعمال سمجھتے ہیں۔ اکثر لوگ انہیں پرانے وقتوں کا قرار دے کر رد کردیتے ہیں اور ایک بار آزمانے کی زحمت بھی نہیں کرتے۔ لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ اب سائنسدان بھی ان گھریلو ٹوٹکوں کی افادیت نہ صرف تسلیم کرنے لگے ہیں بلکہ معالجین اپنے مریضوں کو بھی ان کے استعمال کا مشورہ دینے لگے ہیں۔ آئیے انہی میں سے چند آزمودہ گھریلو ٹوٹکے آپ کو بتاتے ہیں:

متلی کا علاج
اگر آپ کو متلی کی شکایت اکثر رہتی ہے تو اپنے ساتھ ادرک کے ذائقہ والی چند ٹافیاں ضرور ساتھ رکھیں۔ ایک تحقیق کے مطابق ادرک ان لوگوں کے لیے بہت مفید ہے جنہیں متلی، گھبراہٹ اور الٹی جیسی کیفیات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس کے علاوہ ادرک کا استعمال گیس اور بدہضمی کا بھی بہترین علاج مانا جاتا ہے۔

کھانسی کا علاج
عالمی ادارہ صحت کے مطابق شہد بچوں کے لیے کھانسی کی بہترین دوا ہے۔ سال 2012 میں تین سو بچوں پر تحقیق کی گئی جو ایک ہفتہ یا کم عرصے کے لیے بیمار ہوئے۔ اس تحقیق سے پتہ چلا کہ رات سونے سے پہلے صرف 10 گرام شہد پینے والے بچے پرسکون انداز سے سوتے رہے اور جلد صحتیاب ہوگئے برعکس ان بچوں کے کہ جنہیں صرف روایتی دوائیں دی جاتی رہیں۔

زکام کا علاج
مرغی کا سوپ نزلہ اور زکام سے محفوظ رہنے کا بہترین ذریعہ مانا جاتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق مرغی کی یخنی خون میں شامل سفید خلیات پر اثر انداز ہو کر نیٹروفلز کی حرکت کو سست کرتی ہے جو انفیکشن کا خطرہ بڑھاتے ہیں۔

سردرد کا علاج
سر اور گردن کے پچھلے حصے میں برف کی ٹکور کرنے سے مائیگرین جیسے سر درد سے بھی چھٹکارا پایا جاسکتا ہے۔ سال 2013ء میں ایک تحقیق کی گئی جس میں مائیگرین کا شکار 50 افراد کو سر درد کی شکایت میں 30 منٹ تک برف کی ٹکور کرنے کا کہا گیا۔ ان افراد نے بتایا کہ برف کی ٹکور کرتے ہوئے انہیں درد سے کافی آرام ملا جبکہ برف ہٹانے کے بعد ان کے درد میں اضافہ ہوا۔

خراب دانتوں کا علاج
یوں تو ہر پھل کھانے کے اپنے خاص فوائد ہیں لیکن سیب اور گاجر کھانے سے دانتوں کی میل کچیل اور پہلی رنگت سے چھٹکارا بھی حاصل کیا جاسکتا ہے۔ دیگر تازہ اور کراری سبزیاں بھی اس ضمن میں خاصی مددگار ثابت ہوسکتی ہیں۔ محققین کے مطابق جب گاجر اور سیب کو چبایا جاتا ہے تو اس کے ٹکڑے دانتوں سے رگڑ صفائی کا کام بھی انجام دیتے ہیں۔ اس کے علاوہ اسٹرابیری میں بھی دانتوں کی پیلاہٹ صاف کرنے والا ایسڈ پایا جاتا ہے۔

loading ads...

Facebook Comments



POST A COMMENT.