خطرہ، پاکستان کرکٹ ورلڈ کپ سے باہر ہو سکتا ہے

انتظار فرمائیں۔۔۔

ابھی کچھ مہینے پہلے ہی پاکستان ٹیسٹ میں دنیا کی نمبر ایک ٹیم تھا لیکن سابق عالمی چیمپیئن کا ون ڈے میں حال برا ہے اور اب تو 2019ء کے ورلڈ کپ کے لیے براہ راست کوالیفائی کرنے کے بھی لالے پڑ گئے ہیں۔ پاکستان کے سامنے اب ایک بڑا امتحان ورلڈ نمبر ون اور موجودہ ورلڈ چیمپیئن آسٹریلیا کا مقابلہ کرنا ہے جس کے خلاف ون ڈے سیریز جمعے سے شروع ہو رہی ہے۔

پاکستان کو خطرہ ہے کہ وہ دنیا کے سب سے بڑے کرکٹ ٹورنامنٹ میں براہ راست کھیلنے سے محروم ہو جائے گا کیونکہ وہ اس وقت عالمی رینکنگ میں 89 پوائنٹس کے ساتھ آٹھویں نمبر پر ہے۔ بنگلہ دیش اس سے آگے جبکہ ویسٹ انڈیز پیچھے ہے۔

میزبان انگلینڈ اور 30 ستمبر 2017ء کو عالمی رینکنگ کی ٹاپ 7 ٹیمیں اگلے ورلڈ کپ کے لیے ڈائریکٹ کوالیفائی کریں گی۔ اگلا ورلڈ کپ 30 مئی سے 15 جولائی 2019ء تک انگلینڈ میں کھیلا جائے گا۔ 12 ٹیموں پر مشتمل ورلڈ کپ کی باقی دو ٹیموں کا انتخاب 2018ء میں ہونے والے ورلڈ کپ کوالیفائر سے کیا جائے گا جہاں 10 میں سے صرف دو ٹیمیں ہی منتخب کی جائیں گی۔

پاکستان کے لیے اب ضروری ہے کہ وہ اپنی موجودہ رینکنگ، یعنی آٹھویں نمبر کو، برقرار رکھنے کے لیے آسٹریلیا کے خلاف پانچ میں سے کم از کم ایک مچ ضرور جیتے۔ لیکن اس سے زیادہ جیتنا پاکستان کو قیمتی پوائنٹس دے گا۔

اگر پاکستان دو میچز جیت جاتا ہے تو وہ بنگلہ دیش کے برابر آ جائے گا۔ امید تو نہیں لیکن اگر پاکستان آسٹریلیا کو سیریز ہرا دیتا ہے تو وہ بنگلہ دیش سے آگے نکل جائے گا اور اس کے ورلڈ کپ میں براہ راست پہنچنے کے امکانات زیادہ روشن ہو جائیں گے۔

دوسری جانب آسٹریلیا سیریز جیتنے کی صورت میں بدستور ورلڈ نمبر ون رہے گا لیکن ہارنے کے نتیجے میں اس مقام سے محروم ہو سکتا ہے البتہ ایسا صرف چار-ایک کے واضح مارجن سے ہارنے کی صورت میں ہوگا۔ پاکستان کے خلاف آسٹریلیا کا شاندار ریکارڈ دیکھیں تو ایسا ممکن نہیں دکھائی دیتا۔

loading ads...

Facebook Comments



POST A COMMENT.