ہر گھرانہ 90 ہزار روپے کا کھانا ضائع کرنے لگا

انتظار فرمائیں۔۔۔

برطانیہ میں ہر گھرانہ عام طور پر سالانہ 90 ہزار روپے مالیت کا کھانا ضائع کر دیتا ہے حالانکہ حکومت اس سلسلے میں کئی اقدامات اٹھا چکی ہے لیکن خوراک کا کوڑے کے ڈبوں میں جانا آج بھی معمول ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ برطانیہ میں عام صارفین کی جانب سے ضائع کی جانے والی خوراک کی مالیت کی 13 ارب برطانوی پاؤنڈز تک ہے، جو یا تو گھر میں ہی سڑ جاتی ہے یا انتہائی تاریخ مکمل ہونے کے بعد کوڑے کے ڈبوں میں چلی جاتی ہے۔

یہ مقدار 2015ء میں 7.3 ملین ٹن تک پہنچی جبکہ اس سے پچھلے تین سالوں میں سات ملین ٹن تھی۔ یعنی برطانیہ میں موجود ہر شخص پر اوسطاً 75 کلو خوراک کا ضیاع۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ اس میں سے بیشتر خوراک -ساڑھے 4 ملین ٹن- بچائی جا سکتی تھی، جیسا کہ ڈبل روٹی اور دودھ۔ 1.3 ملین ٹن کو کسی حد تک بچایا جا سکتا تھا۔

ایک ایسے وقت میں جب ملک کی خاصی آبادی خوراک کے لیے پریشان ہے، اتنی بڑی مقدار میں کھانے پینے کی چیزوں کا ضائع ہونا افسوسناک ہے۔

loading ads...

Facebook Comments



POST A COMMENT.